جہانگیر ترین کے ساتھ 53 اراکین صوبائی اور ڈیڑھ درجن اراکین قومی اسمبلی ،وزیراعظم اکثریت کھو چکے، تہلکہ خیز دعویٰ

اسلام آبا د(این این آئی)پیپلزپارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات فیصل کریم کنڈی نے کہا ہے کہ جہانگیرترین کے ہمراہ تین قومی اور 15 صوبائی اسمبلی کے اراکین کی عدالت آمد کے ساتھ ثابت ہوگیا کہ پی ٹی آئی میں پھوٹ پڑگئی،جہانگیر ترین کا 53 اراکین صوبائی اور ڈیڑھ درجن اراکین قومی اسمبلی کی ہمراہی کے دعوے کا مطلب ہے کہ وزیراعظم اکثریت کھوچکے۔ انہوںنے کہاکہ پی ٹی آئی کی صفوں میں اس انتشار سے یہ بات بھی ثابت ہوگئی کہ بلاول بھٹو کی تحریک

عدم اعتماد کی حکمت عملی درست تھی، مسلم لیگ ن نے پی ٹی آئی میں انتشار سے فائدہ اٹھاتے ہوئے عمران خان کی حکومت گرانے کے بجائے اسے بچانے کو ترجیح دی۔ انہوںنے کہاکہ مسلم لیگ ن نے جان بوجھ کر استعفوں کا شوشہ چھوڑا تاکہ پی ڈی ایم میں پھوٹ پڑے اور پی ٹی آئی حکومت بچ جائے۔انہوںنے کہاکہ لندن میں بیٹھ کر پی پی پر ڈیل کے الزامات لگانے والے بتائیں کہ ن لیگ نے کس ڈیل کے بعد پی ڈی ایم میں پھوٹ ڈالنے کی سازش تیار کی؟ ۔

. جہانگیر ترین کے ساتھ 53 اراکین صوبائی اور ڈیڑھ درجن اراکین قومی اسمبلی ،وزیراعظم اکثریت کھو چکے، تہلکہ خیز دعویٰ ..

dadaddadd

اپنا تبصرہ بھیجیں