پاکستان مسلم لیگ (ن) استعفے دینے کیلئے تیار۔۔!! نواز شریف نے کس کو یقین دہانی کرادی ‎؟ہلچل مچ گئی

لاہور( نیوز ڈیسک )اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی ، پیپلز پارٹی نے اسمبلیوں سے استعفوں کی مخالفت کر دی جبکہ نوازشریف ،فضل الرحمان اوردیگرجماعتیں اسمبلیوں سے استعفوں کے حق میں ہیں، نواز شریف نے اے پی سی کے شرکاء کو یقین دلایا کہ آپریشن ہونے کے بعد ایک دن بھی

غیرضروری لندن نہیں رہوں گا نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ نواز شریف نے مولانا فضل الرحمان کو پیشکش کی کہ مولانا آپ اگرکل کہیں توہماری جماعت اسمبلیوں سیاستعفوں پرتیارہے۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ اگرسندھ اسمبلی توڑدیں توپھرعمران خان جو چاہتاہے وہ ہوگا، استعفے دینے پر این ایف سی ایوارڈ پر پی ٹی آئی حکومت اپنی مرضی کرلے گی ۔ نواز شریف نے کہا کہ ہم نے استعفے دے کر گھرتونہیں بیٹھنا اورپھراتنی زیادہ سیٹوں پر انتخابات کروانامشکل ہوگا۔ ذرائع کے مطابق آصف زرداری نے کہا کہ میاں صاحب ہم نے1985میں بھی یہ غلطی کی تھی ۔ نجی ٹی وی کے مطابق نواز شریف نے کہا کہ ہم توانتخابات کی بات کررہے ہیں، یہ نہیں کہہ رہے کہ انتخابات میں حصہ ہی نہیں لینا ۔ اس موقع پر مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ہمیں لوگوں کو یقین دلانا ہے کہ ہم اسمبلیوں سے نکل کرآپ کے پاس آئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق پیپلزپارٹی کی مخالفت پر نوازشریف نے کہا کہ پہلے سڑک گرم کرلیں پھراستعفے دیں گے۔ اے پی سی میں اس بات پر بھی اتفاق رائے ہوا کہ اگراستعفوں میں جلدی کی توہوسکتاہے کہ کچھ ارکان استعفے نہ دیں۔ نواز شریف نے کہا کہ فیصلے پرہماری پارٹی میں سے جواستعفے نہیں دے گا وہ ہم میں سے نہیں ہوگا، یقین دلاتاہوں کہ میرا آپریشن ہونے کے بعد ایک دن بھی غیرضروری لندن نہیں رہوں گا۔

dadaddadd

اپنا تبصرہ بھیجیں