نہ کیسز بڑھ رہے ہیں اور نہ ہی کورونا۔۔!! حکومت نے ہر حال میں کل سے تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کر دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) وفاقی حکومت نے کل 23ستمبر سے چھٹی تا آٹھویں کیلئے سکول کھولنے کا اعلان کردیا، 30ستمبر کو پرائمری سکول کھولنے کی اجازت ہوگی،سندھ کے علاوہ کے پنجاب، خیبرپختونخواہ، بلوچستان، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان میں دوسرے مرحلے کے تحت تعلیمی ادارے کھولے جائیں گے۔ معاون خصوصی صحت ڈاکٹر

فیصل کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر شفقت محمود نے کہا کہ کورونا وباء کے باعث 6ماہ تعلیمی ادارے بند رہے، لیکن اب کورونا کی صورتحال کنٹرول میں ہے۔صوبوں کی مشاورت کے بعد سکول کھولنے کا فیصلہ کیا۔گزشتہ ایک ہفتے سے ایس اوپیز پر عمل اور کورونا پھیلاؤ کا جائزہ لیا گیا۔کئی سکول اس لیے بند کیے کہ وہاں ایس اوپیز پر عمل نہیں کیا گیا۔اسی طرح 30 ستمبر کو پرائمری سکول کھولنے کی اجازت ہوگی۔ آج وفاقی اور صوبائی وزراء کی میٹنگ ہوئی، جس میں کورونا کیسز، پھیلاؤ کا جائزہ لیا۔ تمام صوبوں نے فیصلہ کیا کہ پنجاب، خیبرپختونخواہ، بلوچستان، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان میں کل سے چھٹی تا آٹھویں کلاسز شروع کردی جائیں گی۔سندھ نے فیصلہ کیا کہ وہ ابھی دوسرے مرحلے میں سکول نہیں کھولیں گے، بلکہ ایک ہفتہ مزید نظرثانی کرنا چاہتے ہیں۔ معاون خصوصی صحت ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ جب تعلیمی ادارے کھولنے کی حکمت عملی بنائی تو فیصلہ کیا گیا تھا کہ سکول بتدریج درجہ بدرجہ کھولیں گے۔رینڈم ٹیسٹنگ جو کی ہے، اس کا بھی جائزہ لیا گیا ہے۔14 ستمبر کوملک بھر میں599کیسز تھے، 21ستمبر623 ، 22ستمبر کو 622کیسز تھے، اس لیے سکول کھولنے کے بعد تعداد میں کوئی فرق نہیں آیا۔21 ستمبر کو 1.9شرح تھی۔ پچھلے ایک ہفتے میں کیسز میں کوئی اضافہ نہیں ہوا ، اس لیے ہم اگلے مرحلے کو ملتوی نہیں کرسکتے ۔ اب ہم اگلے مرحلے میں بھی تعلیمی اداروں میں ٹیسٹ کریں گے۔ سرکاری تعلیمی اداروں میں 74ہزار ٹیسٹ ہوئے ، نجی 19ہزار کے قریب ٹیسٹ کیے گئے۔والدین سے درخواست ہے ایس اوپیز پر عمل کروائیں، ماسک پہننے کو یقینی بنائیں۔

dadaddadd

اپنا تبصرہ بھیجیں