وزیراعظم کے زبردست فیصلے،1990 کے بعد پہلی بار ٹیکسٹائل انڈسٹری مکمل طور پر بحال

فیصل آباد (آن لائن) وزیر اعظم کے خصوصی ٹیکسٹائل پیکج سے فیصل آباد میں 1990 کے بعد پہلی بار ٹیکسٹائل انڈسٹری مکمل طور پر بحال ہوگئی ہے، 50 ہزار بند پاور لومز چل پڑیں ہیں جبکہ مزید 30 ہزار نئی لومز لگنے کے امکانات بھی روشن ہوگئے ہیں۔ان خیالات کا اظہار

چیئر مین آل پاکستان کاٹن پاور لومز ایسوسی ایشن رانا اظہر وقار نے صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سینئر وائس چیئر مین جواد اکرام کاہلوں،وائس چیئر مین محمد اجمل قصوری،رانا عامر رضا، اعجاز ناگرہ، رانا خرم اخلاق، اکرم واہلہ،چوہدری جاوید صادق،خالد چیمہ، چوہدری محمد نواز اور دیگر سینئر رہنما بھی اس موقع پر موجود تھے۔ رانا اظہر وقار نے کہا کہ پاکستان میں ایکسپورٹرز کو بڑی تعداد میں غیر ملکی آرڈرز مل رہے ہیں جس سے ٹیکسٹائل سیکٹر کی بحالی یقینی ہوگئی ہے۔50 ہزار پاورلومز کے چلنے کی وجہ سے 2 لاکھ سے زائد مزدوروں کی کمی کا سامنا ہے ان 2 لاکھ مزدوروں کیلئے روزگار کے مواقع پیدا ہوگئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے بحران کے باعث دنیا بھر میں ٹیکسٹائل سیکٹر بھی بری طرح متاثر ہوا ہے مگر پاکستان میں حکومتی اقدامات کی بدولت کورونا پر کافی حد تک قابو پالیا گیا ہے اسی لیے پاکستانی ایکسپورٹرز کو ٹیکسٹائل سیکٹر کے بے شمار آرڈر ملنا شروع ہوگئے ہیں۔ایکسپورٹ بہتر ہونے، صنعت کیلئے بجلی کی بلا تعطل فراہمی جیسے اقدامات کی بدولت فیصل آباد میں بند پاور لومز کے چلنے کے ساتھ ساتھ،مزید 30 ہزار پاور لومز لگنے کا امکان ہے۔

. وزیراعظم کے زبردست فیصلے،1990 کے بعد پہلی بار ٹیکسٹائل انڈسٹری مکمل طور پر بحال ..

dadaddadd

اپنا تبصرہ بھیجیں