بریکنگ نیوز: نواز شریف کے بعد مریم نواز بھی اِن ایکشن ۔۔۔ خواجہ آصف اور احسن اقبال کی آرمی چیف سے خفیہ ملاقات کی خبروں پر تہلکہ خیز بیان جاری کر دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) مریم نواز اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیشی کے بعد واپس روانہ ہوئی تو کے عدالت سے باہر نکلتے ہی بھگڈر مچ گئی۔ عدالت کے باہر لگا واک تھرو گیٹ ٹوٹ گیا رش کے باعث کیپٹن(ر)صفدر غصے میں آگئے، کارکنان کو دھکے دے ڈالے۔ مریم نواز کی

اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیشی کے بعد واپسی پر صحافی نے مریم نواز سے سوال کیا کہ کیا عسکری قیادت کے ساتھ ڈنر نواز شریف کی اجازت سے ہوا؟ جس پر مریم نواز نے جواب دیا کہ “ڈنر ہوا یا نہیں ، اس کا کوئی علم نہیں،مجھے بھی سننے میں آیا، سیاسی معاملات سیاسی قیادت کو حل کرنے دیں۔ نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز سیاسی قیادت کو بھی نہیں جانا چاہیے۔ مریم نواز نے کہا سیاسی معاملات پرپارلیمنٹ میں ہی بحث کرنی چاہیے۔ آپ بتائیں ہماری تقاریر کیوں نشر کیں، ظلم و جبر کے ہتھکنڈے ایک حد تک چلتے ہیں۔ اشتہاری کی درخواست ہر منتخب وزیر اعظم کو نا اہل کیا گیا۔ جی ایچ کیو کو نہ ان سیاسی معاملات پر بلانا چاہیے نہ سیاسی قیادت کو وہاں جانا چاہیئے۔ شیخ ریشد کا کہنا تھا ایک ملاقات میں شہباز شریف اور میں ایک ٹیبل پر موجود تھے، گزشتہ ہفتے آرمی چیف سے ملاقات میں شہباز شریف اور خواجہ آصف شامل تھے۔ (ن) لیگ کی عسکری قیادت سے 2 ماہ میں ایک نہیں 2 ملاقاتیں ہوئی ہیں۔ مریم نواز نے کہا گلگت بلستان کا معاملہ ایک سیاسی معاملہ ہے۔ احسن اقبال نے کہا وزیرریلوے شیخ رشید جھوٹ بول رہے ہیں، میری آرمی چیف سے ملاقات نہیں ہوئی، شیخ رشید غلط بیا نی کررہے ہیں ۔ میری آرمی چیف سے ون آ ن ون ملاقات نہیں ہوئی۔

dadaddadd

اپنا تبصرہ بھیجیں