صارفین کیلئے بُری خبر!! بجلی کی قیمت میں کتنے روپے فی یونٹ اضافہ ہونے والا ہے؟ حالات سے ستائے شہریوں کیلئے نئی پریشانی

کراچی(ویب ڈیسک) بجلی کی قیمت میں ماہ اگست کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں 98 پیسے فی یونٹ اضافے کا امکان ہے۔ سی پی پی اے نے بجلی مہنگی کرنے کی درخواست نیپرا میں جمع کرا دی جس پر 30 ستمبر کو فیصلہ کیا جائے گا۔ بجلی کے صارفین کے لئے بری خبر،

بجلی کی قیمت میں 98 پیسے فی یونٹ اضافے کا امکان ہے جو اگست کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں کیا جائے گا۔ سی پی پی اے نے بجلی مہنگی کرنے کی درخواست نیپرا میں جمع کرا دی جس کانیپرا30 ستمبر کو فیصلہ کرے گا۔ اگست میں پانی سے 37.39 فیصد اور کوئلے سے 17.30 فیصد بجلی پیدا کی گئی، مقامی گیس سے 9.59 فیصد اوردرآمدی ایل این جی سے 20.90 فیصد بجلی پیدا کی گئی جبکہ مہنگے فرنس آئل سے 5.42 فیصد بجلی پیدا کی گئی، فرنس آئل سے پیدا شدہ بجلی کی قیمت 12.23 روپے فی یونٹ رہی۔ اس سے قبل نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی نے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی مزید مہنگی کردی۔ نیپرا نے 8 ماہ کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں اضافے کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا جس کے مطابق 5 ماہ کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا جب کہ تین ماہ کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں کمی کی گئی۔ نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ نیپرا نے نومبر 2019 کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ میں فی یونٹ بجلی 98 پیسے مہنگی کر دی اوراس کی صارفین سے وصولی ستمبر2020 کے بجلی بلوں میں ہوگی۔ نوٹیفکیشن کے مطابق دسمبر2019 کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت فی یونٹ بجلی ایک روپے 88 پیسے مہنگی کردی گئی اور یہ اضافہ بھی ستمبر2020 کے بجلی بلوں میں ہوگا۔ نوٹیفکیشن میں بتایا گیا ہے کہ جنوری 2020 کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت فی یونٹ بجلی ایک روپے 11 پیسے مہنگی ہوگئی ہے اور یہ اضافہ اگست کے بجلی بجلوں میں ہوگا جب کہ فروری 2020 کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت فی یونٹ بجلی ایک روپے 20 پیسے مہنگی کردی گئی ہے اور یہ اضافہ اگست کے بلوں میں وصول کیا جائے گا۔

dadaddadd

اپنا تبصرہ بھیجیں