وزیراعظم کا اقوام متحدہ کی اسمبلی سے خطاب ایک بہترین خطاب تھا اور اس پر ۔۔۔ عاصم سلیم باجوہ نے دل جیت لینے والا مؤقف پیش کر دیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) چیئرمین سی پیک اتھارٹی لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی سےجامع خطاب کی۔ وزیراعظم کے بہترین خطاب پرہرپاکستانی کوفخرہے۔ انہوں نےحقیقی معنوں میں پاکستان کی ترجمانی کی۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک پیغام میں عاصم سلیم باجوہ کا مزید کہنا تھا

کہ وزیراعظم نے کشمیر،فلسطین اورعلاقائی امن پردوٹوک مؤقف پیش کیا، انہوں نےکسی بھی مہم جوئی کی صورت بھارت کوسنگین نتائج کاانتباہ کیا۔عمران خان نےعوام کوغربت سےنکالنےکاعہد کیا، تقریر میں سراہنے کیلئے بہت کچھ تھا۔اقوام متحدہ جنرل اسمبلی سےخطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ آزادی اظہار رائے کی آڑ میں نبیﷺ کی شان میں گستاخی کی جاتی ہے، آزاد فلسطینی ریاست کا قیام عمل میں لایا جائے جس کا دارالحکومت بیت المقدس ہو، بھارت کی فسطائی حکومت نے پاکستان کیخلاف کوئی جارحیت کی تو قوم بھرپور جواب دے گی۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اقوام متحدہ کی 75 ویں سالگرہ انتہائی اہم سنگ میل ہے۔ اپنے خطاب کے دوران وزیراعظم نے کورونا وائرس، خطے میں اسلحے کی دوڑ، گستاخانہ خاکوں کی اشاعت، کشمیر میں بھارتی مظالم، فلسطین اسرائیل تنازع، ماحولیات اور اقوام متحدہ و سلامتی کونسل میں بڑے پیمانے پر اصلاحات جیسے اہم معاملات پر گفتگو کی۔ اپنے خطاب میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ مغربی ممالک میں آزادی اظہار رائے کی آڑ میں نبیﷺ کی شان میں گستاخی کی جاتی ہے۔اس وجہ سے دنیا بھر کے کروڑوں مسلمان کے جذبات مجروح ہوتے ہیں، یہ آزادی اظہار رائے کا معاملہ نہیں ہے، مغرب کو یہ بات سمجھنا ہوگی۔ وزیراعظم عمران خان نے مسئلہ فلسطین کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کئی اسلامی مملک اسرائیل کیساتھ امن معاہدے کر رہے ہیں، تاہم ہم آج بھی اپنے پرانے موقف پر قائم ہیں کہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق آزاد فلسطینی ریاست کا قیام عمل میں لایا جایا جس کا دارالحکومت بیت المقدس ہو۔ بھارت کے کشمیر میں مظالم کے حوالے سے وزیراعظم نے کہا کہ بھارتی ٹیرارسٹ فورسز جعلی مقابلوں میں سیکڑوں بے گناہ کشمیریوں کا ماورائے عدالت موت کے گھاٹ اتار چکی ہیں۔

dadaddadd

اپنا تبصرہ بھیجیں