طلال چوہدری کو پھینٹی! عائشہ رجب بھی میدان میں آگئیں، تمام حقائق سے آگاہ کر دیا

فیصل آباد (نیوز ڈیسک ) پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کے ایک جھگڑے کے دوران شدید زخمی ہونے کی اطلاعات سامنے آئی تھیں۔بتایا گیا کہ کہ لیگی ایم این اے عائشہ رجب کے بھائیوں نے طلال چوہدری پر تشدد کیا،یہ واقعہ فیصل آباد میں پیش آیا۔طلال چوہدری اور عائشہ رجب کے

مابین جھگڑا ہوا تھا جس کے بعد ان کے بھائیوں نے طلال چوہدری پر حملہ کیا۔ایم این اے عائشہ رجب کا تعلق بھی طلال چوہدری کے شہر فیصل آباد سے ہے۔تاہم اب لیگی خاتون کے بھائی کا موقف بھی سامنے آ گیا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ ہمارا جھگڑے سے کوئی تعلق نہیں،عائشہ رجب نے مزید کہا کہ معلوم ہوا ہے کہ طلال چوہدری جھگڑے یا حادثے میں زخمی ہوئے ہیں۔دوسری جانب بتایا گیا کہ طلال چوہدری کو شدید زخمی حالت میں اسپتال لایا گیا تھا۔اسپتال ذرائع کے مطابق طلال چوہدری کا بازو دو جگہ سے فریکچر ہوا جب کہ ان کے بائیں بازو کی سرجری کی گئی۔طلال چوہدری کی سرجری لاہور کے نجی اسپتال میں کی گئی۔ جب کہ اس حوالے سے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی ابلاغ ڈاکٹر شہباز گل نے کہا ہے کہ لاہور پولیس کو طلال چوہدری کو سیکورٹی دینی چاہئیے جبکہ پنجاب کی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد سے درخواست ہے کہ وہ مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کے علاج معالجے کا خصوصی خیال کیا جائے۔ہفتہ کو ایک ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری پر لیگی رکن قومی اسمبلی کی جانب سے تشددکے واقعہ کی سی سی پی او لاہور کو ذاتی دلچسپی لے کر واقعے کی ایف آئی آر درج کروانی چاہئیے اور جو قصور وار ہے اسے قانون کے تحت سزا دینی چاہیئے۔واضح رہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری جھگڑے میں زخمی ہو گئے تھے۔ طلال چوہدری جھگڑے میں زخمی ہو گئے جس کے بعد انہیں لاہور کے نجی اسپتال میں داخل کروایا گیا ہے۔

dadaddadd

اپنا تبصرہ بھیجیں